National قومی خبریں

‏حکومت کا نیب کو لگام ڈالنے کا فیصلہ۔نئے ترمیمی آرڈیننس کا مسودہ تیار۔۔

‏حکومت کا نیب کو لگام ڈالنے کا فیصلہ۔نئے ترمیمی آرڈیننس کا مسودہ تیار۔۔

وفاقی وفاقی حکومت کی جانب سے نیب قانون میں تبدیلی کے لیے نئے ترمیمی آرڈیننس کا مسودہ تیار کرلیا گیا ہے جس کے تحت چئیرمین نیب سے ملزمان کی گرفتاری کا اختیار بھی واپس لیا جائے گا۔

مسودے کے مطابق ٹیکس ڈیوٹی کے معاملات نیب کے دائرہ کار میں نہیں آئیں گے۔اہلیہ بچے بھائی بہن بے نامی دار کی میں کیٹگری میں نہیں آئیں گے اور زیر کفالت اہلیہ اور بچے وہ شمار ہونگے جو ذاتی طور پر ٹیکس فائلر نہ ہو۔

مسودے کے مطابق چیئرمین نیب سے ملزمان کی گرفتاری کا اختیار بھی واپس لیا جائے گا اور نویے دن حراست میں رکھنے کسی اور مقام پر سب جیل قرار دینے کا اختیار بھی ختم کردیا جائے گا مسودےمیں اور کہا گیا ہے کہ ریفرنس دائر ہونے کے بعد احتساب عدالت ملزم کے وارنٹ جاری اور حاضری یقینی بنانے کے لیے ملزم سے ضمانتی مچلکے بھی طلب کر سکیں جب کہ مچلکوں کے باوجود عدم حاضری پر عدالت وارنٹ گرفتاری جاری کر سکتی ہے ۔

وفاق صوبائی ریگولیٹری باڈیز کے دائرے کاروالے معاملات نیب نہیں دیکھ سکے گا انکوائریز اور انویسٹی گیشن متعلقہ اداروں کو منتقل کر دی جائینگی ۔