‏حکومت کو سالانہ 12 ارب روپے کی سبسڈی دینا پڑے گی،پرنسپل اماؤنٹ کے ساتھ سالانہ سبسڈی 18 ارب بنتی ہے۔ اگر سبسڈی نہ دیں تو مسافروں کو ٹکٹ 350 روپے تک پڑے گا”- صوبائی وزیرخزانہ ہاشم جواں بخت اورنج لائن سے متعلق حقائق بتا دئے۔۔

واضح رہے کہ وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے صوبے کے متعلق بیان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ‏پبلک ٹرانسپورٹ کے منصوبے کسی بھی اور ترقیاتی منصوبوں کی طرح اہم ہیں، اصل مسئلہ ان منصوبوں میں پلاننگ کا فقدان، پیسوں کا بےپناہ ضیاع اور غیر منطقی سبسڈی ہے، لندن، نیویارک میں ان شہروں کے لوگ سبسڈی کا بوجھ اٹھاتے ہیں لیکن اب لاہور کے اس منصوبے کی سبسڈی جو12 ارب ہے سارا پنجاب دے گا ۔

sabehakhanam